اُردو ہے جِس کا نام ہم ہی جانتے ہیں داغ
سارے جہاں میں دھوم ہماری زُباں کی ہے

12.24.2005

عوامی شادی

اردو ستان پر عزیز احمد صاحب کی خوبصورت نظم عوامی شادی کا آخری بند
دم رخصتی ایک آئی صدا
کرو قراں کے سائے بیٹی بدا
قرآن سر پہ تانے پیادہ چلا
یوں سنت نکاح کا جنازہ چلا
اڑاتے ہیں اپنے ہی سنت کی دھول
اور کہتے ہیں ہم ہیں محب رسول

کچھ باتیں محسنوں اور دل جلوں کی:تعداد0

Post a Comment

کچھ تعلقات اس حوالے سے:

Create a Link

صفحہ اول کو۔۔: Home <<